Category: Hafiz Safwan


Sura 34 سبإ Ayat 14 Tafseer Hafiz Safwan


عقیدۂ حیات بعد الموت کا مطلب دنیاوی کام چھوڑ دینا نہیں ہے…

.
پھر جب ہم نے اس پر موت کا فیصلہ نافذ کیا تو کسی چیز نے ان کو اس کے مرنے کا پتہ نہیں دیا مگر زمین کے کیڑے نے… (سبا 14)

حضرت سلیمان علیہ السلام کی موت کا وقت آیا تو وہ اپنا عصا ٹیکے ہوئے تھے اور جنوں سے کوئی تعمیری کام کرا رہے تھے۔ موت کے فرشتے نے آپ کی روح قبض کرلی مگر آپ کا بے جان جسم عصا کے سہارے بدستور قائم رہا۔ جنات یہ سمجھ کر اپنے کام میں لگے رہے کہ آپ ان کے قریب موجود ہیں اور نگرانی کر رہے ہیں۔ اس کے بعد عصا میں دیمک لگ گئی۔ ایک عرصے کے بعد دیمک نے عصا کو کھوکھلا کر دیا تو آپ کا جسم زمین پر گر پڑا۔ اس وقت جنوں کو معلوم ہوا کہ آپ وفات پا چکے ہیں۔

حضرت سلیمان کا واقعہ یہ سمجھنے کے لیے بہترین مثال ہے کہ کسی کی موت کو جاری دنیاوی کاموں میں حارج نہیں ہونا چاہیے۔ موت ناکارہ ہوکر یا الگ تھلگ رہ کر نہیں بلکہ انسانیت کی بہتری کے کام کرتے کرتے آنی چاہیے۔

سورس